Home » کراچی میں مون سون کاچوتھا اسپیل، کئی گھنٹوں طویل بارش

کراچی میں مون سون کاچوتھا اسپیل، کئی گھنٹوں طویل بارش

by ONENEWS

کراچی میں مون سون کے چوتھے اسپيل کے دوسرے دن بھی بارش کا سلسلہ کئی گھنٹوں سے جاری ہے، مختلف علاقوں میں کئی مرکزی شاہراہوں پر بارش کا پانی جمع ہوگیا، کھلے مین ہول میں گر کر ایک موٹر سائیکل سوار زخمی ہوگیا، شہر میں 60 ملی میٹر سے زائد بارش ریکارڈ کی گئی۔ کے الیکٹرک کے 400 سے زائد فیڈر ٹرپ کر گئے، جس سے کئی علاقوں کو بجلی کی فراہمی معطل ہوگئی، لیاقت آباد میں کرنٹ لگنے سے 2 گدھے ہلاک ہوگئے۔

کراچی میں مون سون کے چوتھے اسپیل میں جمعہ میں کو بھی موسلا دھار بارش ہوئی، شارع فيصل، آئی آئی چندريگر روڈ، صدر، گلستان جوہر، گلشن اقبال، بفرزون، نارتھ کراچی، سرجانی ٹاؤن، نارتھ ناظم آباد، ناظم، لیاقت آباد، ابو الحسن اصفہانی روڈ، یونیورسٹی روڈ، گولیمار، رنچھوڑ لائن، رام سوامی، بہادر آباد، نیو ٹاؤن، طارق روڈ سمیت بیشتر علاقوں میں وقفے وقفے سے بارش کا سلسلہ کئی گھنٹے تک جاری رہا۔

کراچی کے کئی علاقوں ميں بارش کا پانی جمع ہوگيا، شمالی علاقے کی ناگن چورنگی بھی بارش کے پانی ميں ڈوب گئی، وہاں سے گزرنے والے شہريوں کو شديد مشکلات کا سامنا ہے۔

کراچی ميں وقفے وقفے سے ہونیوالی بارش کے بعد مختلف شاہراہوں پر پانی جمع ہوگيا، سندھ ہائيکورٹ کے قريب سڑک پر گٹر ابل پڑے ہيں، صدر کا کچہری چوک بھی پانی پانی ہوگیا، کئی مقامات پر فٹ پاتھ بھی پانی میں ڈوبے نظر آئے۔

یہ بھی پڑھیں : حیدرآباد میں ایک روزکی بارش میں سڑکیں تالاب کامنظرپیش کرنےلگیں

سرجانی ٹاؤن ميں بارش کے بعد يوسف گوٹھ ڈوب ہوگيا، نکاسی نہ ہونے کے باعث پانی گھروں ميں داخل ہونے سے لوگوں کا سامان گھریلو سامان بھی خراب ہوگیا۔

آئی آئی چندریگر روڈ بھی بارش کے پانی ميں ڈوب گئی، سڑک اور فٹ پاتھ ايک ہوگئے ہيں، دفاتر سے گھروں کو جانیوالوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ ٹریفک کی روانی بھی شدید متاثر ہوئی۔

آئی آئی چندریگر روڈ کے قریب کھلے ہوئے مين ہول ميں موٹر سائيکل سوار بھی گر کر زخمی ہوگيا۔

نمائندہ سماء کے مطابق کچھ عرصہ قبل نیا تعمیر ہونے والا یونیورسٹی روڈ دریا بن گیا، کئی فٹ پانی جمع ہونے سے درجنوں گاڑیاں خراب ہوگئيں، ملیر، شاہ فیصل کالونی اور ملحقہ علاقوں میں بھی بارش کا پانی سڑکوں پر جمع ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیں : محکمہ موسمیات کابلوچستان کیلئےبارشوں کاالرٹ جاری

سماء ٹی وی کے مطابق مون سون بارشوں کے چوتھے اسپيل میں شہر قائد میں 60 ملی میٹر سے زائد بارش ریکارڈ کی گئی۔ سب سے زيادہ بارش پی اے ايف بيس مسرور ميں 62.5 ملی ميٹر ريکارڈ کی گئی، ناظم آباد ميں 40.4، صدر اور کيماڑی ميں 40، 40 ملی میٹر بارش ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق لانڈھی میں  37.5، فيصل بيس ميں 37، سرجانی ميں 32.4، اولڈ ايئرپورٹ 30، جناح ٹرمينل 24.4، گلستان جوہر، يونيورسٹی روڈ پر 19، نارتھ کراچی ميں 17.3 ملی ميٹر بارش ريکارڈ کی گئی۔

کراچی ميں وقفے وقفے سے ہونیوالی بارش کے باعث کے اليکٹرک کا سسٹم جواب دينے لگا، گزشتہ روز کی طرح آج بھی 440 فيڈر سے بجلی کی فراہمی معطل ہوگئی، لیاقت آباد، سرجانی، گلشن اقبال، ايف بی ایریا، گلستان جوہر، پی آئی بی کالونی، جمشید روڈ، شاہ فیصل، ملیر، ڈرگ روڈ، بفرزون، کارساز اور نیشنل اسٹیڈیم کے قریبی علاقے بجلی سے محروم رہے۔

مزید جانیے : کراچی میں بارش؛ کے الیکٹرک کے 300 سے زائد فیڈر ٹرپ

دوسری جانب لياقت آباد سندھی ہوٹل کے قريب کرنٹ لگنے سے 2 گدھے ہلاک ہوگئے، دونوں گدھے سڑک پر پڑے بجلی کے تاروں کی زد ميں آئے۔

نمائندہ سماء کے مطابق طویل موسلا دھار بارش کے باعث صدر کی بيشتر دکانيں وقت سے پہلے بند ہوگئيں، زيب النسا روڈ پر پانی فٹ پاتھ تک آگيا، دکاندار مٹی کی بورياں لگا کر بچاؤ کی تدابیر کرتے رہے۔

You may also like

Leave a Comment