Home » پشاور میٹرو سروس 24 اکتوبر سے بحال ہوگی

پشاور میٹرو سروس 24 اکتوبر سے بحال ہوگی

by ONENEWS

File Photo/AFP

ٹرنس پشاور نے کہا ہے کہ میٹرو سروس مقررہ تاریخ سے ایک دن قبل 24 اکتوبر کو بحال کردی جائے گی۔ بسوں میں بار بار آگ لگنے کے واقعات کے باعث انتظامیہ نے 16 سمتبر کو سروس بند کردی تھی۔

ٹرانس پشاور کے ترجمان کے مطابق تمام بسوں کی جامع تحقیقات، نئے آلات کی تنصیب، لوڈ اور روڈ ٹیسٹینگ کی گئی جس کے لیے بس بنانے والی کمپنی اور ٹرانس پشاور کے ماہرین نے دن رات کام کیا جس کے نتیجے میں تعین کردہ تاریخ سے ایک دن قبل سروس عوام کیلئے بحال کردی جائے گی۔

ترجمان نے کہا کہ 24 اکتوبر سے بس سروس بحال ہوگی اور مرکزی راہداری کے ہر اسٹیشن پر ہر 2 سے 4 منٹ کے بعد بس پہنچے گی۔

مسافروں کیلئے ہدایات میں ٹرانس پشاور نے کہا کہ بی آر ٹی میں سفر کرنے والے تمام افراد کیلئے ماسک پہننا لازمی قرار دیا گیا ہے۔ بسوں میں خواتین، معذور اور معمر افراد کی مخصوص نشستوں پر دیگر لوگوں کا بیٹھنا منع ہوگا۔ مسافر حضرات بسوں میں غیر ضروری رش پیدا کرنے سے گریز کریں اور ایک بس میں جگہ نہ ہو تو اگلی بس کا انتظار کریں۔

یہ بھی پڑھیں:چینی ماہرین نے میٹرو بسوں میں آتشزدگی کی وجوہات بتادیں

گزشتہ دنوں چینی ماہرین نے بسوں میں بار بار آگ لگنے کی وجوہات کا تعین کرکے صوبائی حکومت کو رپورٹ پیش کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ بسوں پر غیر معمولی وزن، غیر معمولی بیرونی ٹمپریچر اور کمزور الیکٹرک آلات کے باعث آتشزدگی کے واقعات ہوئے۔

پشاور بی آر ٹی کا افتتاح رواں سال 13 اگست کو وزیراعظم عمران خان نے کیا تھا مگر افتتاح کے بعد ایک ماہ کے اندر 4 بسوں میں آگ لگئی جس کے باعث 16 ستمبر کو صوبائی حکومت نے بسوں کی دوبارہ جانچ پڑتال کا فیصلہ کرتے ہوئے سروس کو عارضی طور پر معطل کردیا تھا۔

خیبرپختونخوا حکومت نے بی آر ٹی بسیں چینی کمپنی سے خریدی تھیں۔ اس لیے بسوں کی جانچ پڑتال اس کمپنی کے ماہرین نے کی۔ بدھ کو ماہرین نے تحقیقاتی رپورٹ خیبرپختونخوا حکومت کو پیش کردی ہے۔

رپورٹ کے مطابق افتتاح کے بعد غیر معمولی بیرونی حالات بی آرٹی میں نقص کا باعث بنی۔ بسوں میں غیر معمولی رش کے باعث موٹر کنٹرولر پر دباؤ پڑتا تھا جس کا بوجھ بسوں میں لگے کیپیسٹر پر جاتا تھا اور اس کے نتیجے میں کیپسٹر جل کر بس میں آگ لگنے کا سبب بن رہا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:چوتھی بس میں آتشزدگی، پشاور میٹرو سروس بند

ماہرین نے اپنی رپورٹ میں ان تمام مسائل کا دیرپا حل بھی تجویز کیا ہے جو بیرونی حالات کا مقابلہ کرے گا اور اگلے 12 سال تک کارآمد ہوگا۔ یاد رہے کہ ان بسوں کی وارنٹی 12 سال ہے۔

اس رپورٹ کی روشنی میں کمپنی تمام بسوں میں نصب موٹر کنڑولرز کو اپڈیٹ اور تبدیل کرے گی۔ بسوں کے درجہ حرارت کو مناسب طور پر برقرار رکھنے کے لیے اقدامات سمیت بسوں کی وائرنگ کو مزید بہتر بنایا جائے گا۔

بی آر ٹی چلانے والی کمپنی ٹرانس پشاور کے ترجمان نے کہا ہے کہ تمام بسیں اور ان کے آلات وارنٹی میں ہیں۔ بسوں کے آلات کی مرمت، اپدیٹینگ سمیت تبدیلی کا خرچ بس کمپنی خود برداشت کر رہی ہے۔ بس کمپنی کی سفارش پر بی آر ٹی سروس کو 25 اکتوبر تک بحال کردیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:پشاور میٹرو کی مشینیں ایک دن میں خراب

صوبائی حکومت کے ترجمان کامران بنگش پشاور نے سماء کو بتایا کہ بی آرٹی بسوں میں کپسٹر کی استعداد کاربڑھایا جارہا ہے جبکہ بسوں میں دیگر معمولی نقائص بھی موجود ہیں جن کو دور کیا جارہا ہے۔

انہوں نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ چینی کمپنی بسوں میں پرزوں کی تبدیلی کے اضافی چارجز نہیں لے گی۔ بسیں وارنٹی میں ہیں، تمام اخراجات کمپنی کے ذمہ ہوں گے۔ تمام بسوں کا از سر نو جائزہ لیا جائے گا

You may also like

Leave a Comment