Home » پاکستان میں کرونا ویکسین کیسے دی جائیگی؟

پاکستان میں کرونا ویکسین کیسے دی جائیگی؟

by ONENEWS

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) نے پاکستان میں کوویڈ-19 ویکسینیشن کے حوالے سے تفصیلات جاری کردیں۔

این سی او سی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پاکستان میں کرونا ویکسینیشن کا عمل بین الاقوامی طرز پر مربوط ڈیجیٹل سسٹم کے تحت ویکسین لگائی جائے گی۔ جس سے شفافیت کو یقینی بنایا جاسکے گا۔

حفاظتی ٹیکوں سے متعلق تمام تفصیلات نیشنل امیونائزیشن مینجمنٹ سسٹم کے ذریعے عمل میں لائی جائیں گی، جسے گزشتہ سال وفاقی حکومت نے تیار کیا تھا۔ اسی طرح این سی او سی کے ذریعہ حفاظتی ٹیکوں کے پروگرام کو مربوط کرنے کیلیے نیشنل ویکسینیشن ایڈمنسٹریشن اینڈ کوارڈینیشن سیل بھی تشکیل دیا گیا ہے۔

صوبائی اور ضلعی ویکسینیشن مینجمنٹ اور کوآرڈینیشن سیل (این وی اے سی سی) یعنی نیشنل ویکسینیشن ایڈمنسٹریشن اینڈ کوارڈینیشن سیل کو رپورٹ کریں گے۔

پورے ملک میں بالغ ویکسین مراکز (اے وی سی) قائم ہوچکے ہیں۔

یہاں آپ کو یہ ویکسین کیسے ملے گی؟:

 پہلے آپکو اپنا قومی شناختی کارڈ نمبر صحت تحفظ کی ہیلپ لائن 1166 پر میسج یا این آئی ایم ایس کی ویب سائٹ پر جاکر خود کو رجسٹر کرسکتے ہیں۔

 جس کے بعد سسٹم آپ کے موجودہ ایڈریس (پتے) اور رجسٹریشن کی تصدیق کرے گا اور آپ کو اپنے نامزد کردہ اے وی سی کی تفصیلات ایک منفرد پن کوڈ کے ساتھ بھیجا جائے گا۔ اگر نامزد اے وی سی آپ کی موجودہ تحصیل سے باہر ہے تو، آپ اسے ویب پورٹل کے ذریعے یا پہلا ایس ایم ایس موصول ہونے کے پانچ دن کے اندر 1166 ہیلپ لائن پر کال کرکے تبدیل کرسکتے ہیں۔

 آپکے تحصیل یا دسٹرکٹ میں ویکسین پہنچنے کے بعد عملہ آپ کی تفصیلات ایم آئی ایم ایس کی ویب پر انداراج کرے گا اور جس کے بعد آپکو ایک تصدیقی پیغام ایس ایم ایس کے ذریعے بھیجا جائے گا۔

 تصدیق اور اندراج کے بعد آپ کو اپنے اصل شناختی کارڈ اور مخصوص پن کوڈ کے ہمراہ اپائٹمنٹ کے دن کوویڈ-19 ویکسینیشن کے مرکز جانا ہوگا۔

کوویڈ سینٹر کا عملہ آپکا شناختی کارڈ نمبر اور پن کوڈ چیک کرے گا، جس کے بعد آپکو کرونا وائرس ویکسین دی جائے گی۔

 ویکسینیشن کرنے والا عملہ آپ کی تفصیلات این آئی ایم ایس کی ویب سائٹ پر شیئر کرے گا جبکہ ایک تصدیقی پیغام آپ کو ایس ایم ایس کے ذریعے بھیجا جائے گا۔

 ویکسین لگنے کے بعد آپکو 30منٹ تک زیر نگرانی رکھا جائے کہ آپکو ویکسین کا کوئی سائیڈ ایفکٹ تو نہیں ہوا۔

ضلعی، صوبائی اور وفاقی سطح پر سرکاری محکمہ صحت کو اَپ ڈیٹ کرنے کیلیے ریئل ٹائم میں ڈیش بورڈ تیار کیا جائے گا۔

سندھ میں 14 کرونا ویکسین مراکز قائم کرادیے گئے ہیں:

دوسری جانب سندھ حکومت نے صوبہ بھر میں 14کرونا وائرس ویکسین سینٹرز قائم کیے ہیں جن میں سے 9 کراچی میں واقع ہیں۔ کراچی کے ضلع ساؤتھ، ایسٹ اور سینٹرل میں 2،2 جبکہ کورنگی، ملیر اور ویسٹ میں ایک ایک کرونا مرکز قائم کیا گیا ہے۔

سندھ کے دیگر اضلاع سکھر، لاڑکانہ، حیدرآباد، شہید بینظیر آباد اور میرپور خاص میں بھی ویکسینیشن مراکز قائم کیے گئے ہیں۔

وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے ویکسین کوآرڈینیشن سیل اور عہدیداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ ویکسینیشن کا آغاز کراچی ایکسپو سنٹر سے کریں۔

پاکستان نے کن ویکسین کو اجازت دی ہے:

پاکستان کے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی تین ویکسینز کو اجازت دی چکی ہے جس میں چین کی سینوفرم ویکسین، آسٹرا زینیکا-آکسفورڈ کی ویکسین اور روس کی اسپوٹک وی ویکسین شامل ہیں۔

You may also like

Leave a Comment