Home » جویریہ،سعودپرالزامات عائدکرنےوالوں میں حسن خان کااضافہ

جویریہ،سعودپرالزامات عائدکرنےوالوں میں حسن خان کااضافہ

by ONENEWS

تصویر: سماءڈیجیٹل

سلمیٰ ظفراورشیری شاہ کے بعد جویریہ اور سعود پر معاوضے کی عدم ادائیگی کے الزامات عائد کرنے والوں میں اداکارحسن خان کا نام بھی شامل ہوگیاہے۔

حسن خان نے فیس بک پیج پرشیئر کی جانے والی ویڈیو میں کہا کہ میرا تجربہ بھی اتنا اچھا نہیں رہا، ڈیڑھ سال کا عرصہ گزرگیا لیکن مجھے ادائیگی نہیں کی جارہی لیکن مجھے اتنا مسئلہ نہیں ہے کیونکہ میں ایک بہت اچھی فرم کے ساتھ کام کررہا ہوں لیکن میرے ساتھی اداکار ہیں جو مسائل کا شکار ہیں تو سعود بھائی اور جویریہ باجی ، آپ ان لوگوں کو تو ادائیگی کردیں۔

افسوس ہوتا ہے کہ آپ لوگوں کے پاس بڑا گھراور گاڑی ہے لیکن اپنا پورا گھر چلانے والے اداکاروں کو دینے کیلئے پیسے نہیں، ان کے پیسے روک کر کوئی کیسے سوسکتا ہے اوراتنی خوشحال زندگی کیسے گزار سکتا ہے۔

اداکار نے مزید کہا کہ آپ لوگ ہرسال لوگوں کو رمضان میں دین کی دعوت دیتے ہیں اور نعتیں پڑھتے ہیں لیکن حقوق العباد بھی بہت اہمیت رکھتے ہیں، “مجھے ڈیڑھ سال سے کہا جارہا ہے کہ چینل سے پیسے نہیں آئے تو میری بات آپ سے ہوئی تھی ، چینل سے نہیں۔ خیرمیں اپنے پیسے معاف کرتا ہوں، اوراب میں جانوں اور میرا اللہ”۔

حسن خان کے اس ویڈیوبیان پر اداکار غالب کمال سمیت بہت سے افراد نے تنقید کرتے ہوئے لکھا کہ ایسے لوگوں کی وجہ سے حقداروں کا حق بھی مارا جاتا ہے ۔ غالب کمال نے لکھا کہ تم لوگ تو ٹی وی پرآنے کیلئے فری میں کام کرتے ہو لیکن بھگتنا دوسروں کو پڑتا ہے۔

اس سے قبل سلمیٰ نے سوشل میڈیا پر لائیو سیشن میں کہا تھا کہ میں نے جیوانٹرٹینمنٹ پرنشرہونے والے ڈرامے ’’یہ زندگی ہے‘‘ میں 6 سال تک کام کیا، جے جے ایس پروڈکشن کے تحت بننے والے ڈرامے ’’ یہ کیسی محبت ہے ‘‘ کی 500 اقساط میں کام کیا لیکن جویریہ اور سعود اپنے پروڈکشن ہاؤس میں کام کرنے والے فنکاروں اور عملے کو ادائیگی نہیں کرتے۔

جس کے شیری شاہ نے بھی انسٹاگرام پرشیئرکی جانے والی ویڈیو میں یہی الزام عائد کرتے ہوئے کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ ویڈیو کسی کی حمایت یا مخالفت میں نہیں، سلمیٰ ظفرکی ویڈیو دیکھ کر بہت افسوس ہوا میں ان کی تکلیف سمجھ سکتی ہوں کیونکہ میں بھی اسی تکلیف اور دکھ سے گزری ہوں۔

شیری شاہ کے مطابق جے جے ایس کے ساتھ ” یہ کیسی محبت ہے ” کی 400 اقساط اور “یہ زندگی ہے” کی 100 سے زائد اقساط کا تقریبا ایک کروڑ روپیہ بنتا ہے۔ ویڈیو بنانے سے قبل کوشش کی کہ میری رقم مجھے مل جائے لیکن نہ میری کالز سنی جاتی تھیں اور جب میں گھر جاتی تو مجھ سے ملاقات بھی نہیں کی جاتی تھی۔ سلمیٰ ظفر کی ویڈیو دیکھ کرسوچا کہ اس مسئلے کوحل کیا جائے۔ میں نہ تو بدزبانی کررہی ہوں نہ کوئی الزام عائدکررہی ہوں لیکن مجھے میری محنت کے پیسے دے دیں۔

دوسری جانب سلمیٰ ظفر کےسنگین الزامات کے بعد امریکہ میں مقیم جویریہ سعود نے اردو نیوزسے گفتگو میں ان تمام الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا تھاکہ سلمی ظفر نے ہمارے ساتھ کئی سال تک کام کیا اگر ہم انہیں پیسے نہیں دے رہے تھے تو انہیں پہلے مہینے ہی کام چھوڑ دینا چاہیے تھا۔

اس بیان کے بعد جویریہ کی جانب سے سلمیٰ ظفرکے خلاف قانونی چارہ جوئی کرنے کا بھی اعلان کیا گیا تھا۔

تاہم شیری شاہ اور اب حسن خان کی جانب سے بیانات سامنےآنے کے بعد فی الحال جویریہ اور سعود کی جانب سے کسی موقف کااظہارنہیں کیا گیا۔

.

You may also like

Leave a Comment