Home » ایران اور روس نے ووٹرز کا ڈیٹا حاصل کرلیا، امریکا

ایران اور روس نے ووٹرز کا ڈیٹا حاصل کرلیا، امریکا

by ONENEWS

امریکا کے انٹی لیجنس اداروں نے تسلیم کیا ہے کہ روس اور ایران 2020 میں ہونے والے صدارتی انتخابات سے قبل امریکی ووٹرز کی معلومات حاصل کر چکے ہیں اور رائے عامہ پر اثر انداز ہونے کے لئے کوششیں کرتے ہیں۔

نیشنل انٹیلیجنس کے ڈائریکٹر جان رٹ کلف نے ایف بی آئی کے ڈائریکٹر کرس وائے کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے تصدیق کی ہے کہ رائے دہندگان کے اندراج کی کچھ معلومات ایران اور روس نے حاصل کی ہیں۔ ان معلومات میں ووٹرز کی فہرست ویسے بھی سب کی پہنچ میں ہوتی ہے مگر حکام نے ایسی ای میل دیکھی ہیں جس میں ووٹرز کو کو دھمکانے، بدامنی پھیلانے اور لوگوں بھڑکانے کے لئے ایران کی جانب سے بھیجی گئی ہیں۔

ماتحت انٹیلی جنس اہلکاروں کے مطابق رائٹ کلف بدھ کے روز بھیجی گئی ای میلز کا حوالہ دے رہے تھے۔ ان ای میل میں یہ تاثر دیا گیا تھا کہ بھیجنے والے ٹرمپ کے حامی پراؤڈ بوائز گروپ ہیں مگر دراصل اس کے پیچھے ایران کا کردار تھا۔ متعدد ووٹرز نے کہا کہ انہیں یہ پیغامات موصول ہوئے ہیں۔

ای میلز میں لکھا گیا ہے کہ آپ انتخابات میں ٹرمپ کو ووٹ دیں، ڈیموکریٹ پارٹی چھوڑ کر ریپبلکن پارٹی میں شامل ہوجائیں اور ان احکامات پر عمل کرکے دکھائیں ورنہ ہمیں پتہ چل جاتا ہے کہ کس نے کس کو ووٹ دیا ہے۔ پھر ہم آپ کو چھوڑیں گے نہیں۔

ای میل کے آخر میں تھوڑی مہذب دھمکی دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اگر میں آپ کی جگہ ہوتا تو اس پیغام کو سنجیدہ لیتا۔ ای میل میں ووٹر کے گھر کا پتہ بھی شامل ہوتا ہے تاکہ وہ خوفزدہ ہوجائے۔

رائٹ کلف نے کہا کہ دھمکی آمیز ای میلوں کے علاوہ ایران نے ایک ویڈیو بھی شیئر کی ہے جس میں یہ سکھایا گیا ہے کہ بیرون ملک سے لوگ جعلی ووٹ کس طرح ڈال سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ اقدامات مایوس ہونے والے مخالفین کی مایوس کن کوششیں ہیں۔ روس اور ایران رجسٹرڈ ووٹرز کو غلط معلومات پہنچانے کی کوشش کرتے ہیں۔ وہ سمجھتے ہیں ان معلومات کے ذریعے وہ الجھن پیدا کردیں گے۔ انتشار پھیلائیں گے اور امریکی جمہوریت پر عوام کا اعتماد کمزور کریں گے۔

قومی سلامتی کے اعلی عہدیدار نے یہ وضاحت نہیں کی کہ روسیوں اور ایرانیوں نے ووٹر کی معلومات کیسے حاصل کی تھی یا روسی اسے استعمال کیسے کر رہے ہیں۔

امریکی انٹلیجنس ایجنسیوں نے پہلے متنبہ کیا تھا کہ ایران ٹرمپ کو نقصان پہنچانے کیلئے انتخابی نظام میں مداخلت کرسکتا ہے جب کہ روس انتخابات میں ٹرمپ کی مدد کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ ماہرین کا خیال ہے کہ ایران اگر ٹرمپ کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہا ہے تو وہ پراؤڈ بوائز کے نام سے دھمکی آمیز پیغامات بھیج کر ٹرمپ کو میڈیا کے ذریعے نقصان پہنچانا چاہتا ہے۔

اقوام متحدہ میں ایران کے مشن کے ترجمان نے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ایران کو امریکی انتخابات میں مداخلت کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سعید خطیب زادہ نے سرکاری ٹی وی کو بتایا کہ ہم پہلے بھی کہہ چکے ہیں کہ ایران کو اس بات سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ امریکی صدارتی انتخابات میں کون منتخب ہوجائے۔

وائٹ ہاؤس کے ترجمان جوڈ ڈیئر نے کہا کہ ٹرمپ نے سرکاری اداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ امریکی انتخابات میں مداخلت کی کسی بھی کوشش کی باضابطہ طور پر نگرانی کریں اور ناکام بنائیں۔ اداروں نے ایسی ہر قسم کی کوشش ناکام بنادی ہے۔

ایف بی آئی کے ڈائریکٹر نے کہا کہ ہم اپنے انتخابات میں غیر ملکی مداخلت یا کسی بھی مجرمانہ سرگرمی کو برداشت نہیں کریں گے جس سے ووٹ کے تقدس کو خطرہ ہو یا انتخابات کے نتائج پر عوام کا اعتماد مجروح ہو۔ ہم اپنے بنیادی ڈھانچے میں لچک پیدا کرنے کے لئے ایک برادری کی حیثیت سے سالوں سے کام کر رہے ہیں اور آج انفراسٹرکچر لچکدار ہے۔ عوام کو اعتماد میں رہنا چاہئے کہ ان کے ووٹوں کی گنتی ہوگی۔

You may also like

Leave a Comment