Home » آن لائن امتحانات کامطالبہ:لاہور، فیصل آباد میں تصادم سےمتعدد طلبازخمی

آن لائن امتحانات کامطالبہ:لاہور، فیصل آباد میں تصادم سےمتعدد طلبازخمی

by ONENEWS

آئن لائن امتحانات نقل کا لائسنس ہے، وزیر تعلیم

لاہور میں نجی یونیورسٹی کے طلباء اور گارڈز میں تصادم کے دوران متعدد افراد زخمی ہوگئے جبکہ احتجاج جاری ہے۔

جوہر ٹاؤن کے خیابان جناح روڈ پر واقع یونیورسٹی آف سینٹرل پنجاب کے باہر آن لائن امتحانات کے مطالبے کیلئے صبح سے ہی طلبا موجود تھے۔ پولیس کے مطابق 300 سے ساڑھے تین سو طلبا اس احتجاج میں شریک ہوئے۔

احتجاج کے دوران طلباء نے یونیورسٹی میں داخلے کی کوشش کی جس پر گارڈز سے جھگڑا ہوا اور معاملہ ہاتھا پائی تک پہنچ گیا۔ طلباء اور گارڈز دونوں جانب سے ایک دوسرے پر شدید پتھراؤ کیا گیا۔

یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے فی الحال کوئی مؤقف سامنے نہیں آیا جبکہ اسٹاف جامعہ کے اندر ہی موجود ہے۔

صوبائی وزیر تعلیم

سماء سے خصوصی گفتگو میں وزير تعليم ہائر ايجوکيشن راجہ یاسر کا کہنا تھا کہ جن کو امتحان دینا ہوتا ہے ان کے لیے فیس ٹو فیس یا آن لائن سے فرق نہیں پڑھتا، جو نالائق طلبا ہے وہ ہمیشہ سے بغیر امتحان کے پاس ہونا چاہتے ہیں، جس کی ہرگز اجازت نہیں ہوگی، تاہم یہ فیصلہ متعلقہ یونی ورسٹی کی صوابدید پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ بے شک امتحانات آسان کر ديں مگر آن لائن امتحان کا مطالبہ جائز نہیں کیونکہ جنہوں نے پڑھائی کی ہوتی ہے، انہیں اس سے فرق نہیں پڑتا ہے۔ ایسے تو ہر کوئی سڑک پر اٹھ کر اپنے مطالبات منوانے آجائے گا۔

وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ جامعات اپنے معاملات میں خود مختار ہوتی ہیں اور ایک چارٹر کے تحت چلتی ہیں۔ ہم نے ہر نجی یونی ورسٹی کو یہ اختیار دیا کہ وہ اپنی بساط کے مطابق معاملات چلائے اور امتحانات کا انعقاد کرے۔

کلاسزآئن لائن ہوئیں،امتحانات بھی آئن لائن لیں،نمل کےطلباکااحتجاج

انہوں نے مزید کہا کہ جن طلباء نے پڑھائی کی ہوگی ان کو اس سے مسئلہ نہیں ہوگا کہ امتحانات آن لائن ہو یا نہیں اور جس نے پڑھائی کی ہوگی وہ طلباء اس احتجاج میں بھی نہیں ہوں گے۔ طلباء کا مطالبہ تب جائز ہوتا جب وہ یہ کہتے کہ پڑھائی نہیں ہوئی تو امتحانات کیسے دیں لہٰذا تشدد کی جانب جانا کسی صورت درست نہیں ہے۔

وزیر تعلیم نے کہا کہ ہم نے یونی ورسٹی کو کہا ہے کہ اپنے حالات کے مطابق فیصلہ کریں۔ آن لائن امتحانات کا مطالبہ وہی کرتے ہیں جنہیں نقل کرکے پاس ہونا ہوتا ہے، اگر پڑھائی نہیں کریں گے تو انہیں نوکری کون دے گا۔ آن لائن امتحانات کا مطلب نقل کا لائسنس دینا ہے۔

طلباء کا مؤقف

احتجاج میں شامل طلباء کا کہنا تھا کہ پورے سمسٹر ہم نے آن لائن کلاسز لی ہیں جبکہ بعض طلباء ایسے ہیں جو آن لائن کلاسز میں شریک نہیں ہوسکے جس کی وجہ سے انہیں کچھ نہیں آتا۔ آن لائن امتحانات میں اوپن بک کے ذریعے امتحان دیں گے تاکہ جسے جو سوال نہیں آتا اسکا جواب دیکھ کر دے سکے۔

فیصل آباد

دوسری جانب ضلع فیصل آباد کے شہر جڑانوالہ میں بھی نجی یونیورسٹی کے طلباء نے احتجاج کیا جس پر پولیس نے لاٹھی چارج کرکے طلباء کو منتشر کر دیا۔

پولیس کے لاٹھی چارج سے سے 5 طلباء زخمی ہوگئے جبکہ بعض طلباء کو حراست میں لے لیا گیا۔

You may also like

Leave a Comment