Home » ادویات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ

ادویات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ

by ONENEWS

ادویات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) حکومت نے ادویات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کر دیا ،  253ادویات کی قیمتوں میں مزید 25-30فیصد اضافہ کیا گیا ۔

اس پر اینکر پرسن غریدہ فاروقی نے لکھا کہ “ادویات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کر دیا گیا!!!! 253ادویات کی قیمتوں میں مزید 25-30فیصد اضافہ!!! اس ملک میں کس کس چیز کو روئیں۔۔۔ ابھی دو دن پہلے وزیراعظم نے کہا مہنگائی ختم کریں گے”۔

فریحہ ادریس نے لکھا کہ ” ادویات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ،  253ادویات کی قیمتوں میں مزید 25-30فیصد اضافہ کردیا گیا”۔

فریحہ ادریس کی ٹوئیٹ پر اجمل جامی نے لکھا کہ ”  ایسے ماحول میں یہ ایک انتہائی ’’منفی‘‘ خبر ہے”۔

یادرہے کہ حکومت نے ستمبر کے آخر میں  وفاقی کابینہ نے زندگی بچانے والی 94 ادویات کی قیمتوں میں 260 فیصد تک اضافے کی منظوری دی تھی جس کے بعد ایک پریس کانفرنس میں معاون خصوصی صحت نے یہ فیصلہ ادویات کی قلت کو دور کرنے کے لیے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان (ڈریپ) کی سفارش پر کیا گیا۔اس پر وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان کی رائے یہ تھی کہ ادویات کی قیمتوں میں اضافہ مقامی مارکیٹ میں ان کی قلت کو ختم کرنے میں مدد فراہم کرے گا کیوں کہ بہت سے مریضوں کو درآمد کردہ ادویات خریدنی پڑتی ہیں۔

جو دوائیں مہنگی ہوئیں وہ لائف سیونگ اور پرانے فارمولے والی ہیں، ان دواؤں کی قیمتوں پرمناسب تبدیلی نا آنے سے یہ مارکیٹ سے غائب ہو جاتی ہیں اور غائب ہونے والی دوائیں بلیک میں ملنے لگتی ہیں۔انہوں نے کہا تھا کہ ضروری تھا کہ دواؤں کی قیمتیں ایسی ہوں کہ سب کی پہنچ میں ہوں، وہ ادویات جو لوگوں کو مہنگی مل رہی تھی اب با آسانی دستیاب ہوں گی، حکومت اور ڈریپ کا کام دواؤں کی دستیابی کو یقینی بنانا ہے، مارکیٹ میں ناپید دواؤں کی قیمت کو تھوڑے سے اضافے کی ضرورت تھی۔معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ ہم نے ادویات کی قیمتیں اتنی بڑھائی ہیں کہ لوگوں تک پہنچ سکیں، ہم دوا ساز کمپنیز کے دباؤ میں نہیں آئے

مزید :

اہم خبریںقومیتعلیم اور صحت

You may also like

Leave a Comment